0

شینا بورا قتل کیس کی کیا کہانی ہے؟

بھارت کا شہر ممبئی جو گلیمر اور گہما گہمی کے حوالے سے اپنی علیحدہ پہچان رکھتا ہے، اس شہر میں دھوکہ دہی اور قتل کی ایک خوفناک کہانی سال 2012 میں منظر عام پر آئی، اس کہانی نے ایک دہائی سے زیادہ عرصے سے بھارتی عوام کو اپنے سحر میں جکڑ رکھا ہے۔

ممبئی میٹرو ون میں کام کرنے والی25 سالہ شینا بورا 24 اپریل 2012 کو بغیر کسی اطلاع کے غائب ہوگئی، اور لاکھ کوشش کے باوجود کئی سال تک اس کا سراغ نہیں ملا۔

برسوں تک اس کیس کی تحقیقات کرنے کے بعد ممبئی پولیس نے شینا کی والدہ اندرانی مکھرجی، جو ایک سابق میڈیا ایگزیکٹیو تھی اور اس کے دوسرے شوہر پیٹر مکھرجی کو اس کے ڈرائیور شیامور رائے کے ساتھ اگست 2015کو اغواو قتل کے الزام میں گرفتار کیا۔

ملزمان کی گرفتاری کئی مہینوں کی نگرانی کے بعد عمل میں آئی جو ایک خفیہ اطلاع کے بعد شروع کی گئی تھی جس میں غیر قانونی ہتھیار رکھنے کے الزام میں گرفتار ڈرائیور شیامور رائے سے تفتیش کے بعد اس کے کیے گئے انکشافات کے بعد ہوا۔

شینا بورا کو کیسے قتل کیا گیا؟

شینا بورا کو مبینہ طور پر اپریل 2012 میں اندرانی، اس کے اس وقت کے ڈرائیور شیامور رائے اور سابق شوہر سنجیو کھنہ نے ایک کار میں گلا دبا کر قتل کر دیا تھا۔

پوچھ گچھ کے دوران کھنہ اور رائے نے جرم کا اعتراف کر لیا، تاہم اندرانی نے ان الزامات کی سختی سے تردید کی اور دعویٰ کیا کہ شینا زندہ اور اچھی ہے، جو امریکہ میں مقیم ہے۔

شیام رائے کی پوچھ گچھ نے مبینہ طور پر شینا کے قتل کی تفصیلات کا انکشاف کیا، جس کے بعد اندرانی اور اس کے سابق شوہر سنجیو کھنہ کو مقدمے میں شامل کیا گیا۔

ملزم رائے کے مطابق قتل کی منصوبہ بندی بہت احتیاط سے کی گئی تھی، اندرانی نے جرم سے ایک دن پہلے لاش کو ٹھکانے لگانے کے لیے جگہ کا سروے کیا تھا۔ 24 اپریل 2012 کی شام کو باندرہ میں کھنہ نے مبینہ طور پر شینا کو گلا گھونٹ کر قتل کردیا۔

تفتیش کاروں کا دعویٰ ہے کہ اس کے بعد لاش کو ورلی میں اندرانی کی رہائش گاہ پر لے جایا گیا جہاں اسے ایک بیگ میں چھپا کر کار کے ٹرنک میں رکھ دیا گیا۔

ملزم ڈرائیور رائے نے دعویٰ کیا کہ اس کے بعد ہم تینوں نے مہاراشٹرا کے گاگوڈ گاؤں کا رخ کیا تاکہ لاش کو جلا کر ٹھکانے لگایا جاسکے۔

مقدمے کی سماعت کے دوران مکھرجی خاندان کے کئی پوشیدہ راز بھی سامنے آئے، شینا بورا مبینہ طور پر اپنے سوتیلے بھائی راہول کے ساتھ ’لیو ان ریلیشن شپ‘ میں تھی جو پیٹر مکھرجی کے چھوٹے بیٹے اپنی پہلی بیوی کے ساتھ تھی۔

سنٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن (سی بی آئی) نے دعویٰ کیا کہ مالی تنازعہ اور اندرانی کی شینا کے راہول کے ساتھ تعلقات کی مخالفت قتل کے پیچھے اہم عوامل تھے، اس سازش میں پیٹر مکھرجی بھی شامل تھا۔

اندرانی مکھرجی جب اپنی سوتیلی بیٹی کے قتل کے الزام میں جیل میں قید تھی، ’انبروکن : دی ان ٹولڈ اسٹوری‘ کے عنوان سے ایک یادداشت سامنے آئی جس میں اس نے کہا کہ شینا بورا اس کی بہن کی طرح تھی، بیٹی نہیں۔

ممبئی شہر میں جہاں جرائم کی اور بھی کئی داستانیں ہیں وہیں شینا بورا قتل کیس بھی ایک خوفناک کہانی ہے، جو جرائم کی تاریخ کے ریکارڈ میں ایک تاریک باب ہے۔

Comments


#شینا #بورا #قتل #کیس #کی #کیا #کہانی #ہے